Mohsin Naqvi 2 Lines Poetry in Urdu

mohsin naqvi 2 lines poetry in urdu

Mohsin Naqvi 2 Lines Poetry in Urdu available on this post, we listed mohsin naqvi sad poetry 2 lines with images, you will get all types of 2 line shayari related to mohsin naqvi.


This post is designed only for mohsin naqvi fans, who are searching mohsin naqvi two line shayari form long time, we try to give all kind of 2 line shayari related to mohsin naqvi under one roof, everyone like to read and share mohsin naqvi poetry on social media, if you want to read or want to use mohsin naqvi shayari on your whatsapp, facebook status then this post best for you.

We give you Mohsin Naqvi 2 line poetry in different types, you can read it as Urdu, Roman Urdu or use images, it is up to you what is your purpose, as you know, all the poetry of Mohsin Naqvi is the best but we have selected only the best mohsin naqvi sad poetry 2 lines and love poetry.

Before read Mohsin Naqvi 2 Lines Poetry in Urdu i would like to inform you if you see any mistake or you can’t read fonts, you can contact us or write in the comment box.
 

Mohsin Naqvi 2 Lines Poetry in Urdu

ہم نے گہرے دریاؤں سے سیکھا ہے
آپ اپنی ہی موج میں بہنا، چپ رہنا

 وہ بھی کیا دن تھے کے پل میں کر دیا کرتے تھے ہم
عمر بھر کی چاہتیں، ہر ایک ہرجائی کے نام
ہر گھڑی رائیگاں گزرتی ہے
زندگی اب کہاں گزرتی ہے
اس کے میرے فاصلے محسن نہ پوچھ
رنگ سے خوشبو جدا ہے اور بس
کس کو چاہیں، کس کو بھلا دیں
دوستی میں ہے انتخاب عذاب
ہم سے مت پوچھ کب رتیں بدلیں
ہم رہے اسکے انتظار میں گم
آنکھ نم بھی کرو تو بس اتنی
رنگ پھیکے پڑیں نہ منظر کے
بھلے لگتے ہیں طوفان سے لڑتے بادل مجھکو
ہوا کے رخ پہ چلتی کشتیاں اچھی نہیں لگتیں
کھلی زمینوں میں جب بھی سرسوں کے پھول مہکیں
تم ایسی رت میں سدا میرا انتظار کرنا

Mohsin Naqvi 2 Line Poetry

جانے اب کس دیس ملیں گے اونچی ذاتوں والے لوگ
نیک نگاہوں، سچے جذبوں کی سوغاتوں والے لوگ
صرف ہاتھوں کو نہ دیکھو کبھی آنکھیں بھی پڑھو
کچھ سوالی بڑے خود دار ہوا کرتے ہیں
ہر وقت کا ہنسنا تجھے برباد نہ کر دے
تنہائی کے لمحوں میں کبھی رو بھی لیا کر
اسے گنوا کے میں زندہ ہوں اس طرح محسن
کہ جیسے تیز ہوا میں چراغ جلتا ہے
دل کی خاطر زندہ رہیے کب تلک؟
دل ہی کہتا ہے ک اب مر جائیے
بچھڑ چلا ہے تو میری دعا بھی لیتا جا
وہاں وہاں مجھے پائے، جہاں جہاں جائے
ایک قیامت کی خراشین تیرے سَر پہ سجائیں
ایک محشر میرے اندر سے اٹھا تیرے بعد
یہاں مزدور کو مرنے کی جلدی کچھ یوں بھی ہے محسن
کہہ زندگی کی کشمکش میں کفن مہنگا نا ہو جائے
کس لیے محسن کسی بے مہر کو اپنا کہوں
دِل كے شیشے کو کسی پتھر سے کیوں ٹکراوں میں
عکس و آئینہ میں اب ربط ہو کیا تیرے بعد
ہَم تو پھرتی ہیں خود اپنے سے خفا تیرے بعد

 Mohsin Naqvi Sad Poetry 2 Lines

وہ آج بھی صدیوں کی مسافت پہ کھڑا ہے
ڈھونڈا تھا جسے وقت کی دیوار گرا کر
ہَم دونوں کا دکھ تھا ایک جیسا
احساس لیکن جدا جدا تھا
شمار اس کی سخاوت کا کیا کریں كے وہ شخص
چراغ بانٹتا پھرتا ہے چھین کر آنکھیں
جس کو طوفان سے اُلجھنے کی عادت ہو محسن
ایسی کشتی کو سمندر بھی دعا دیتا ہے
آتا ہے کون کون میرے غم کو بانٹنے
محسن تو میری موت کی افواہ اڑا كے دیکھ
ہَم سے بیوفائی کی انتہا کیا پوچھتے ہو محسن
وہ ہَم سے پیار سیکھتا رہا کسی اور كے لیے
کون کہتا ہے نفرتوں میں درد ہے محسن
کچھ محبتیں بھی بڑی ازایت ناک ہوتی ہیں
اِس شب كے مقدر میں سحر ہی نہیں محسن
دیکھا ہے کئی بار چراغوں کو بُجھا کر
کہاں ملے گی مثال میری ستم گری کی
کہہ میں گلابوں كے زخم کانٹوں سے سی رہا ہوں

Mohsin Naqvi Two Line Shayari

میں تیرے ملنے کو معجزہ کہہ رہا تھا لیکن
تیرے بچھڑنے کا سانحہ بھی کمال گزرا
اب تو بس جان ہی دینے كی باری ہے محسن
میں کہاں تک ثبات کروں كے وفا ہے مجھ میں 
وہ کیا گیا كے رونق درو دیوار گئی محسن
ایک شخص لے گیا میری دنیا سمیٹ کر
ذکر شب فراق سے وحشت اسے بھی تھی
میری طرح کسی سے محبت اسے بھی تھی
عمر ساری تو بہت دور کی بات ہے محسن
اک لمحے كے لیے کاش وہ میرا ہوتا 
 اک بار اور دیکھ کر آزاد کر دے مجھے محسن
کہ میں آج بھی تیری پہلی نظر کی قید میں ہوں
اب تک میری یادوں سے مٹائے نہیں مٹتا
بھیگی ہوئی اک شام کا منظر تیری آنکھیں
محسن میں بات بات پہ کہتا تھا جس کو جان
وہ شخص آج مجھ کو بے جان کر گیا 
ہَم تو ہنستے ہیں دوسروں کو ہنسانے کی خطر محسن
ورنہ دِل پہ زخم اتنے ہیں كے رویا بھی نہیں جاتا
تمھیں جب روبرو دیکھا کریں گے
یہ سوچا ہے بہت سوچا کریں گے

Mohsin Shayari Two Line

اسے پانا اسے کھونا اسی كے ہجر میں رونا
یہی گر عشق ہے محسن تو ہَم تنہا ہی اچھے تھے
وہ اکثر دن میں بچوں کو سلا دیتی ہے اِس دَر سے
گلی میں پِھر کھلونے بیچنی والا نا آ جائے
اس نے یہ سوچ کر ہمیں الوداع کہہ دیا محسن
یہ غریب لوگ ہیں محبت كے سوا کیا دے گے
ہَم اپنی دھرتی سے اپنی ہر سمٹ خود تلا شیں
ہماری خاطر کوئی ستارہ نہیں چلے گا
آج کی رات بھی ممکن ہے نا سو سکوں محسن
یاد پِھر آئی ہے نیندوں کو اڑانے والی
ازل سے قیام ہیں دونوں اپنی ضدوں پہ محسن
چلے گا پانی مگر کنارہ نہیں چلے گا
چل پڑا ہوں میں زمانے كے اصولوں پہ محسن
میں اب اپنی ہی باتوں سے مکر جاتا ہوں
سیاہ رات میں جلتے ہیں جگنو کی طرح
دلوں كے زخم بھی محسن کمال ہوتے ہیں
ہمیں تو کب سے پتہ ہے کے تو بے وفا ہے محسن
تجھے چاہا اِس لیے شاید تیری فطرت بَدَل جائے

Conclusion Mohsin Naqvi 2 Lines Poetry in Urdu

Now end of this Mohsin Naqvi 2 Lines Poetry in Urdu post you have lot of numbers of mohsin naqvi 2 line poetry, if you have poetry related to mohsin shayari two line you can submit thru our submit form, if you like our mohsin naqvi sad poetry 2 lines, mohsin naqvi 2 line shayari please share it with your friends and family, Don’t forget to share it on social media so more poetry lovers can visit this mohsin naqvi 2 line poetry post.
Previous articleWo 5 Maqamat Jaha Soraj Ghuroob Nahi Hota
Next articleBest Pathan Jokes in Urdu 2021

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here